صوبائی حکومتوں کو سرکاری گندم کا اجراء بڑھانا ہوگا

صوبائی حکومتوں کو سرکاری گندم کا اجراء بڑھانا ہوگا 91

اسلام آباد (حنیف خالد) وزیراعظم عمران خان نے پنجاب اور سندھ کی حکومتوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ سرکاری گوداموں سے گندم حکومت کے مقرر کردہ نرخوں پر فلور ملوں کو جاری کریں۔ پنجاب میں 7جولائی سے 17ہزار ٹن یومیہ گندم سرکاری گوداموں سے ایک ہزار فلور ملوں کو جاری ہو رہی ہے مگر سندھ حکومت نے ابھی تک گندم کا اجراء شروع نہیں کیا۔ پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے مطابق 15اکتوبر سے سندھ حکومت فلور ملوں کو سرکاری گندم 1475روپے فی چالیس کلو گرام جاری کرنے کی تجویز پر غور کر رہی ہے۔ دریں اثناء آئندہ سیزن میں کسان سے مناسب ریٹ پر اسکی گندم کی خریداری کیلئے وفاقی حکومت نے چاروں صوبائی حکومتوں سے جو تجاویز منگوائی تھیں اس پر غورو خوص کے بعد یہ بات حکومت نے طے کی ہے کہ آئندہ مارچ اپریل مئی میں کسان سے گندم 1600روپے من خریدی جائیگی اور کسی ذخیرہ اندوز کو کسان سے گندم براہ راست لینے کی اجازت نہیں ہو گی البتہ فلور ملز مالکان پنجاب اور سندھ میں کسانوں سے براہ راست گندم سرکاری قیمت خرید پر حاصل کر سکیں گے۔ چونکہ عمران خان کی

ہدایات پر سندھ اور پنجاب کی بیورو کریسی اور صوبائی حکومتوں نے عملدرآمد نہیں کیا اسلئے کراچی میں گندم کا نرخ 5150روپے فی بوری اور درآمدی گندم کا نرخ 4400روپے بوری تک چلا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں